برائے مہربانی ڈاکوؤں سے مزاحمت نہ کریں: کراچی پولیس چیف

کراچی پولیس کے سربراہ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل (آے آئی جی) جاویدعالم اوڈھو نے کراچی کے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ برائے مہربانی ڈاکوؤں سے مزاحمت نہ کریں۔

کراچی میں یونیورسٹی روڈ پر این ای ڈی یونیورسٹی کے طالب علم بلال ناصر کے قتل کے واقعے پرکراچی پولیس چیف جاویدعالم اوڈھو نے پریس کانفرنس کی۔ ان کا کہنا تھاکہ طالبعلم بلال ناصر کی موت کے بعد ہی ایس ایس پی ایسٹ کی ٹیم نے کام شروع کردیا تھا، سی سی ٹی وی فوٹیجز اور دیگر شواہد کی مدد سے ایک ملزم نظام کو زخمی حالت میں گرفتار کیا گیا، گرفتار ملزم نظام الدین کی عمر 16 سال ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ملزم نظام الدین افغان باشندہ ہے جو جمالی گوٹھ کا رہائشی ہے، دوسرے ملزم کی شناخت ہوچکی ہے اس کے رشتےداروں کو شامل تفتیش کیا گیا ہے اور اسے بھی جلد گرفتار کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ کراچی پولیس چیف کا کہنا تھاکہ ملزم کی گرفتاری سے امید کرتے ہیں مقتول کے ورثاء کا پولیس پر اعتماد بحال ہوسکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں بڑھتی ہوئی بیروزگاری اور غربت اسٹریٹ کرائمز میں اضافے کا باعث ہے جبکہ غیر قانونی طور پر کراچی میں رہائش پذیر افغان باشندوں کو قانون کے ضابطے میں لانے کی ضرورت ہے۔ کراچی پولیس چیف نے شہریوں سے اپیل کہ برائے مہربانی ڈاکوؤں سے مزاحمت نہ کریں۔
خیال رہے کہ این ای ڈی یونیورسٹی کے 21 سالہ طالب علم بلال ناصر کو جمعرات کی شام یونیورسٹی روڈ پر این ای ڈی یونیورسٹی کے باہر ڈکیتی کے دوران مزاحمت کرنے پر فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا تھا۔ مقتول فیڈل بی ایریا کا رہائشی اور این ای ڈی یونیورسٹی کے شعبہ پیٹرولیم میں تھرڈ ائیر کا طالب علم تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں